جب شکیل عادل زادہ شکیلہ جمال بنے

ایک نشست میں پورا ناول پڑھا اور۔۔

فیس بک پوسٹ پر پوچھا کہ جو احباب ایک ہی نشست میں پورا پورا ناول پڑھ ڈالتےہیں، یا کسی ڈرامے کا گھنٹوں پر محیط سیزن ختم کر کے اٹھتے ہیں ، کیا ان کی آنکھوں اور سر میں درد نہیں ہوتا؟ جواب میں جنہوں نے لکھا کہ انہیں آنکھ یا سر درد کی کوئی شکایت نہیں ہوتی، ان سے حسدمحسوس کیا۔ جن کا جواب اس سے الٹ آیا، ان سے یہ جان کر دل میں اطمینان سا ہوا کہ چلو! کوئی اور بھی ہے جسے یہ عارضہ لاحق ہے۔
پوچھا یوں، کہ عرصے سے دل ایسی فرصت مانگتا ہے کہ گھنٹوں بیٹھ کر (بلکہ لیٹ کر) ناول پڑھا کریں، فلمیں دیکھیں اور دنیا کا کوئی کام دھندا اس میں مخل نہ ہو۔ لیکن جب کبھی ایسی فرصت ملی، اور گھنٹوں کتاب پڑھنے یا فلم دیکھنے میں بتائے تو بجائے لطف اندوز ہونے کے، بیزار ہو کر اٹھے۔ سرکا درد اور آنکھوں کی دکھن سارے مزے کا مزا خراب کر دیتی۔
اور حاصل کلام یہ ہر چیز کسی قاعدے اور اعتدال میں ہو تو ہی ٹھیک ہے ورنہ نری اکتاہٹ ہے۔
یہ بور سی ویڈیو بھی ایسے ہی ایک تجربے کی کہانی ہے۔ جو چھ منٹ 20 سیکنڈ کی ویڈیو میں کہا ہے، کم و بیش وہی اوپر کی چند سطروں میں بھی بیان کر دیا ہے۔ ویڈیو بے شک نہ دیکھیں۔ ہاں اگر آپ پوچھنا چاہیں کہ ہمیں جرائم اور سنسنی پر مبنی ناول پسند ہیں، کیا محمد حنیف کا ناول، آ کیس آف ایکسپلوڈنگ مینگوز پڑھنا چاہیے؟ تو میرا جواب ہو گا، اگر آپ کو کہیں سے مل گیا تو ضرور پڑھیں۔

کیسے لکھیں؟ لکھنے والوں کے لیے چند ٹوٹکے

سٹیفن کنگ کے انکل کے گھر، ایک بڑا اور بہت ہی بھاری ٹول باکس تھا۔ آپ نے مستری حضرات کے پاس ٹول باکس دیکھے ہوں گے۔ ان میں خانے بنے ہوتے ہیں، جن میں اوزار رکھے جاتے ہیں۔ مستری حضرات جہاں جاتے ہیں، یہ ٹول باکس ساتھ لے کر جاتے ہیں، تاکہ کہیں کسی اوزار کی ضرورت پڑے تو نکال کر استعمال کر لیا جائے۔
لیکن سٹیفن کنگ کے انکل کے گھر جو ٹول باکس تھا، وہ ذرا مختلف تھا۔ ایک تو وہ بنا لکڑی کا ہوا تھا، دوسرا سائز میں معمول سے ذرا زیادہ بڑا تھا،اور تیسرا ،بھاری بھی بہت تھا۔
کہانی آگے بڑھانے سے پہلے بتا دوں کہ سٹیفن کنگ ، ایک جانے مانے لکھاری ہیں۔

2018 PEN Literary Gala, New York, USA - 22 May 2018

Mandatory Credit: Photo by Evan Agostini/Invision/AP/REX/Shutterstock (9689901ac) PEN America literary service award recipient Stephen King 2018 PEN Literary Gala, New York, USA – 22 May 2018

ایک دن سٹیفن صاحب اپنے انکل کے گھر گئے تو پتہ چلا

کو پڑھنا جاری رکھیں

ڈیکلن والش کی کتاب "پاکستانی کی نو زندگیاں” ایک تعارف