شاباش خیبر پختونخوا حکومت

ایک خبر نے نہال کر دیا ہے۔ ایکسپریس ٹریبیون کے مطابق خیبر پختونخوا کے 34 ہزار طلبہ گزرے چھ ماہ میں نجی اسکولوں سے سرکاری اسکولوں میں منتقل ہو گئے ہیں۔
خیبر پختونخوا کے سرکاری تعلیمی ادارے نے این جی او آدم سمتھ انٹرنیشنل کے ساتھ مل کر تئیس اضلاع میں سروے کرایا۔ سروے کے مطابق ستمبر 2015 سے مارچ 2016 تک طلبہ کی ایک بڑی تعداد نجی اداروں سے سرکاری تعلیمی اداروں میں منتقل ہوئی۔
والدین کے مطابق اس کی وجہ سرکاری اسکولوں میں معیار کی بہتری ہے۔ مزے کی بات یہ کہ ان میں سے 62 فیصد والدین وہ تھے جنہوں نے شروع میں اپنے بچے نجی اسکولوں میں داخل کرائے۔
50 فیصد والدین نے بڑھتے تعلیمی اخراجات کی وجہ سے اپنے بچے نجی تعلیمی اداروں سے اٹھوا لیے، 28 فیصد کو نجی اداروں کا معیار پسند نہ آیا، 19 فیصد نے یہاں موجود سیکھنے اور سکھانے کے لیے مواد کی عدم فراہمی کی شکایت کی۔
سروے سے معلوم ہوا کہ والدین کا سرکاری تعلیمی اداروں پر اعتماد بحال ہو رہا ہے۔ کو پڑھنا جاری رکھیں

Advertisements